22

بھارتی سیاستدانوں نے آوارہ کتوں پر انتخابی پوسٹر چپکا دیئے

اپنی انتخابی مہم کامیاب بنانے کےلیے بھارتی سیاستدانوں نے ہر طرح کی اخلاقی ذمہ داری کو بالائے طاق رکھ دیا۔ (فوٹو: سوشل میڈیا)

اپنی انتخابی مہم کامیاب بنانے کےلیے بھارتی سیاستدانوں نے ہر طرح کی اخلاقی ذمہ داری کو بالائے طاق رکھ دیا۔ (فوٹو: سوشل میڈیا)

اتر پردیش: بھارتی ریاست اترپردیش میں حالیہ انتخابات کے دوران کئی امیدواروں نے ہر قسم کی اخلاقیات کو بالائے طاق رکھتے ہوئے آوارہ کتوں پر بھی اپنے انتخابی پوسٹر چپکا دیئے، تاکہ اُن کا پیغام زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچے۔

خبروں کے مطابق، اترپردیش میں رائے بریلی اور بالیا اضلاع سے کم از کم دو امیدواروں کے بارے میں معلوم ہوا ہے کہ انہوں نے اپنا پیغام ’’دور دور تک‘‘ اور ’’زیادہ سے زیادہ لوگوں تک‘‘ پہنچانے کےلیے سڑکوں پر پھرنے والے آوارہ کتوں تک کو نہیں بخشا اور ان پر اپنے انتخابی اسٹیکر چپکا دیئے۔

ایسی ہی کچھ تصاویر گزشتہ ہفتے سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئیں۔ بہت سے لوگوں نے ان تصویروں پر میمز بنائے اور اپنے دل کی بھڑاس نکالی۔ انتخابی امیدوار بھی اپنی انتخابی مہم کامیاب ہونے پر خوش تھا۔

لیکن دوسری جانب جانوروں کے تحفظ اور حقوق پر کام کرنے والے افراد اور تنظیموں نے شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ کسی انسان کو زیب نہیں دیتا کہ وہ اپنی تشہیر کےلیے جانوروں کو اتنی بے دردی سے استعمال کرے۔

جانوروں کے حقوق کی ایک سرگرم کارکن، رینا مشرا نے پوچھا کہ اگر ’’کسی امیدوار کے منہ پر اس کا اپنا انتخابی اسٹیکر چپکا کر اسے پورے شہر میں گھمایا جائے تو خود اسے کیسا لگے گا؟‘‘

بعض افراد نے پولیس سے مطالبہ کیا کہ وہ ایسی بیہودہ حرکت کرنے والے امیدواروں کے خلاف کارروائی کرے تاکہ وہ اخلاقیات کی حد میں رہتے ہوئے اپنی انتخابی مہم چلائیں۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.