88

بنوں کا جلسہ حکومت کی بنیادیں ہلا دیگا: عطاء الرحمن

جمعیت علماء اسلاام کے صوبائی امیر سینیٹر عطاء الرحمن نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف نی اسلام آ باد میں جس مقام پر 126 دن دھرنا دیا تھا آج اسی جگہ پر انہی کی حکومت کے خلاف ڈی چوک میں تمام طبقہ کے لوگ احتجاج پر ہیں ، اساتذہ ہو یا مزدور ، ڈاکٹرز ہوں یا لوکل گورنمنٹ کے ملازمین، سرکاری ملازمین حتیٰ کہ کسان باری باری احتجاجی مظاہرے کر رہے ہیں اورایسا دن نہیں جس روز احتجاج نہ ہو یہی وجہ ہے کہ غریب اور متوسط طبقہ اب مجبور ہے کہ مزید اس حکومت سے جان چھڑائی جائے اس لئے تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں نے ملکر پاکستان ڈیموکریٹک مؤومنٹ کا قیام عمل میں لا کر حکومت کے خلاف احتجاجی تحریک شروع کی ہے چھ جنوری کو ضلع بنوں میں جلسہ اور ریلی کا انعقاد کیا گیا ہی ان خیالات کا اظہار اُنہوں نے جے یو آ ئی کی ضلعی مجلس عاملہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا جس میں ضلع بنوں کے تمام تحصیلوں کے ذمہ داروں نے شرکت کی اس موقع پر ممبر قومی اسمبلی زاہد اکرم دُرانی ، سابق سینیٹر عبدالرزاق مجددی ، سابق ایم پی اے قاری گل اعظیم ، سابق ایم پی اے ملک ریاض خان ، ضلعی جنرل سیکرٹری حاجی نیاز ، ضلعی ترجمان مولانا اعزاز اللہ حقانی ، ملک میر محمد حیات خان و دیگر نے بھی خطاب کیا۔

مقررین نے کہا کہ ضلع بنوں میں چھ جنوری کوپی ڈی ایم کے زیر اہتمام جلسہ کیلئے میزبانی جمعیت علماء اسلام کو دی گئی ہے اس لئے پی ڈی ایم میں شامل جماعتوں کے کارکن بھر پور تیاری شروع کریں ہماری احتجاجی تحریک عوام دُشمن حکومت کے خلاف ہے اور یہ حکومت کے آخری آ یام ہیں مہنگائی نے عوام کا جینا محال کر دیا ہے آ ئے روز ٹیکسز ، مہنگائی اور بد امنی سے مزید عوام تنگ آ چکی ہے لیکن حکومت ٹھس سے مس نہیں ہو رہی حکومت نے ایک آور منصوبہ بندی بنائی ہے اور وہ ختم نبوت بل میں ترامیم لا رہی ہے اسی طرح اسرائیل کو بھی تسلیم کرنے کا منصوبہ بنایا جا رہا ہے لہذا اس حکومت سے مزید چھٹکارہ پانے کیلئے پی ڈی ایم تحریک کو کامیاب بنائیں انشاء اللہ بنوں کا جلسہ حکومت کی بنیادیں ہلا دے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.