149

یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی بنوں میں بلڈ سوسائٹی

دی بنوں : یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی بنوں میں بلڈ سوسائٹی کے زیر اہتمام منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر ہاؤسنگ اینڈ ورکس اکرم خان دُرانی نے کہا ہے کہ خون عطیہ کرنے سے نہ صرف انسانی جانوں کو بچایا جا سکتا ہے بلکہ اس اقدام سے ایک دوسرے میں محبت کی فضا بھی قائم ہو تی ہے جو کہ معاشرے میں اجتماعیت کو جنم دیتی ہے جس قوم کے افراد ایک دوسرے سے محبت سے پیش آتے ہوں وہ کبھی ناکام نہیں ہوتی مگر جہاں نفرت ہو تی ہے اور اجتماعیت کی بجائے انفرادیت کو توجہ زیادہ دی جاتی ہو تو وہ قومیں مٹ جایا کر تی ہیں بنوں یونیورسٹی کی بلڈ ڈونر سوسائٹی کردار اور عمل کے لحاظ سے ایک نمونہ ہے کیونکہ جب ایک غریب شخص کو خون کی ضرورت پڑھ جاتی ہے تو ایسے لوگ بھی موجود ہیں جو ایسے لوگوں کی مجبوری سے فائدہ اُ ٹھا کر خون کے بدلے میں بھاری رقوم وصول کر تے ہیں بلڈ ڈونر سوسائٹی کے زیر اہتمام غریب لوگوں کو مفت خون کی فراہمی لائق تحسین اقدام ہے اساتذہ کو چاہئے کہ وہ اپنے کلاسوں میں خون عطیہ کرنے کے فوائد اور ثواب کے بارے میں طلباء میں شعور پیدا کریں ان خیالات کا اظہار انہوں نے یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی بنوں میں بلڈ سوسائٹی کے زیر اہتمام منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر بنوں یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر انجینئر سید عابد علی شاہ ، اکرم خان دُرانی کالج کے پرنسپل ڈاکٹر رضا خان ، چیف آرگنائزر اسسٹنٹ پروفیسر یار محمد ، سوسائٹی کے صدر فیض الاسلام ، سابق جنرل سیکرٹری زوہیب خان نے خطاب کیا جبکہ مسلم لیگ ن کے صوبائی نائب صدر ملک نواب خان ، ڈین آف سائنسز پروفیسر ڈاکٹر سلطان محمود ، پبلک ریلیشن آفیسر بشیر احمد، آئی ٹی چیئرمین ڈاکٹر اورنگزیب ، ڈائریکٹر فنانس حافظ صادق ، ڈائریکٹر ایڈمن ڈاکٹر جاوید خان ، ڈائریکٹر سیکورٹی سلام اللہ خان ڈاکٹر ناصر گل بھی موجود تھے وفاقی وزیر اکرم خان دُرانی نے کہا کہ خون عطیہ کرنے کیلئے لوگوں میں شعور اُجاگر کرنے کیلئے یونیورسٹی اپنا کردار ادا کریں کیونکہ اس وقت بنوں میں چودہ پندرہ کالجز اور سینکڑوں سکول ہیں جنہیں وقتاً فوقتاً مدعو کیا کریں تاکہ لوگوں میں خون دینے کے حوالے سے خوف اور ڈر ختم کیا جائے اور خون عطیہ کرنے سے انکار نہ کریں خون عطیہ کرنے سے بہترین خدمت کوئی نہیں اُنہوں نے کہا کہ وائس چانسلر بنوں یونیورسٹی نے گھر کے سربراہ کی حیثیت سے بہترین انتظامی ڈھانچہ تشکیل دیا ہے اور یہاں پر بدنظمی کا ماحول ختم کردیا ہے نظم وضبط پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرنا چاہیئے اسی طرح اکرم خان دُرانی کالج اپنے نظم وضبط اور سامنے آنے والے نتائج سے ایک مثال بن گئی ہے اور دوسری کالجز ان کی تقلید کرنے لگی ہے بنوں یونیورسٹی کی خوبصورتی نظم وضبط کے ساتھ ساتھ ان کی سرسبزاور شادابی سے بھی ہے اس سلسلے میں طلبہ بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لیں اور اپنے پیاروں کے نام پر پودے لگائیں جن کا ثواب ان کے پیچھے لکھا جائے گا اُنہوں نے کہا کہ بنوں کے کئی اہم شخصیات ملک کے اہم عہدوں پر رہے لیکن وہ اپنے خطہ کیلئے کچھ نہ کرسکے اور ہمیں اُن آپنوں سے شکایت بھی ہے کہ اُن کی اپنی مٹی سے محبت کیوں نہیں تھی مگر ہمیں اپنی مٹی سے محبت تھی اس لئے ایسے ادارے ہونے چاہئے جو اس مقابلے میں آجائے اور آج بنوں کو دوسری قوموں کے مقابلے میں کھڑا کردیا ہے جس سے حوصلہ ، فہم اور عملی کام کاموقع بھی دیا اُنہوں نے کہا کہ اس ملک پر اتنا ہمارا حق بھی ہے جو کسی دوسرے کا ہے ہم نااہل نہیں سی پیک کا منصوبہ اسلام آباد سے ہوکر جارہا تھا اور خیبرپختونخواہ کا صرف ہزارہ بیلٹ اس میں آرہا تھا ہم نے ڈیرہ اسماعیل خان سے گزارنے پر مجبور کردیا اور آج بنوں ، کرک ، لکی مروت سے سی پیک کو ملادیا ہے جبکہ کاشو پل پر انڈسٹریل اسٹیٹ بھی بنے گا اور منصوبے کا یہ حصہ 14 اگست 2018 ء تک مکمل ہوگا اُنہوں نے کہا کہ مخالفین طعنے دے رہے تھے کہ اکرم دُرانی لفظی باتیں کررہے ہیں کو ئی انٹرنیشنل ائرپورٹ نہیں بنے گا مگر ہم نے حقیقت میں ثابت کردیا ہے اور 75 کروڑ روپے بنوں انٹرنیشنل ائرپورٹ کیلئے ریلیز بھی ہوچکے ہیں اور تجارت کا راستہ اس خطہ ء پر بنانے کیلئے غلام خان شاہراہ کا منصوبہ مکمل کیا اس کے باوجود ہمارے بعض نوجوان تبدیلی کی بات کرتے ہیں اور اس ننگا کلچر کا ساتھ دے رہے ہیں مگر ہم اپنے بزرگوں اور دین اسلام کے خوبصورت کلچر کو ختم نہیں کرنے دینگے جس کیلئے ہمارے قائدین نے خون کی قربانیاں دی ہے انہوں نے کہا کہ بنوں کی تعمیر وترقی اور یہاں کے باسیوں کے حق کیلئے جب تک زندہ ہوں خون کے اخری قطرے تک جدوجہد کروں گا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.