86

گرفتار ہوا تو آصفہ بھٹو میری آواز ہوگی، بلاول

پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ ہم سیاسی رہنماؤں کی گرفتاری کے خلاف ہیں، میں اگر گرفتار ہوا تو آصفہ بھٹو میری آواز ہوگی۔

جے وی اوپل کیس کے سلسلے میں نیب راولپنڈی میں پیشی کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ چیف جسٹس صاحب نے خود کہا تھا کہ بلاول بھٹو زرداری بے گناہ ہیں، پھر بھی دسمبر میں اچانک پتہ نہیں کیا ہوا کہ مجھے پہلا نوٹس بھیجا گیا۔

اس کے بعد جب ہم نے اعلان کیا کہ پی ٹی آئی ایم ایف کے خلاف جدوجہد کریں گے، ہم اس معاہدے کو مسترد کرتے ہیں تو ایک اور نوٹس آیا۔

گرفتار ہوا تو آصفہ بھٹو میری آواز ہوگی، بلاول
انہوں نے کہا کہ جس الزام میں آج نیب میں مجھے بلایا گیا سب کو معلوم ہے، میں کسی کاروباری سرگرمی میں ملوث نہیں رہا، جب میں پبلک آفس ہولڈر نہیں تو نیب کا نوٹس جاری کرنے کا کیا تک بنتا ہے۔

بلاول نے بتایا کہ میں جب کمپنی کا شیئر ہولڈر بنا 7 سال کا تھا، میرا مؤقف کل بھی وہی تھا، آج بھی وہی ہے کہ میں بے گناہ ہوں۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے غریبوں کے معاشی قتل کو مزید ایک دن بھی برداشت نہیں کریں گے، ملک کی وکلاء برادری جمہوریت اور قانون کے ساتھ ہے۔

بلاول نے کہا کہ قومی اسمبلی کے اجلاس میں قائد ایوان ہوتے ہیں نہ قائد حزب اختلاف ہوتے ہیں جبکہ دونوں کا کردار اہم ہوتا ہے،امید کرتا ہوں اپوزیشن لیڈر جلد ایوان میں آئیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.