46

پیپلز پارٹی نے ہمیشہ عوام کے مفاد کی سیاست کی ہے: شیراعظم

سابق صوبائی وزیر اور پیپلز پارٹی کے صوبائی نائب صدر شیراعظم خان نے جے یو آئی کی اہم وکٹیں اڑادیں جے یو آئی کے رضاخان خاندان اور ساتھیوں سمیت پیپلزپارٹی میں شامل ہوگئے شمولیتی تقریب سرکی خیل وزیر میں منعقد ہوئی جسمیں تحصیل ڈومیل کے ناظم فدامحمد خان،ڈسٹرکٹ ممبر حضرت عرف امیر،تحصیل کونسلر فاروق وزیر سمیت اہم شخصیات ار رہنماؤں نے شرکت کی شیراعظم وزیر نے رضاخانا ور انکے ساتھیوں کو پیپلز پاٹی میں شمولیت پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ عوام کی روز بروز شمولیت اس بات کا ثبوت ہے کہ عوام 2018میں پیپلز پارٹی کو اقتدار میں دیکھنا چاہتے ہیں کیونکہ پیپلز پارٹی نے ہمیشہ عوام ،ملک اور جمہوریت کے مفاد میں سیاست کی ہے جبکہ باقی پارٹیاں مفادات کی سیاست کرتی ہے یہی وجہ ہے کہ م سلم لیگ ن کی غلط خارجہ پالیسیوں کی وجہ سے ایک طرف ملک قرضوں میں ڈوبا ہوا ہے تو دوسری طرف بھارت کے بعد ایران اور افغانستان کے ساتھ بھی ہمارے تعلقات خراب ہوگئے ہیں حالانکہ پیپلز پارٹی کے دورا میں صرف بھارت کے ساتھ دشمنی تھی اسی طرح خیبر پختونخوا میں پانچ سال اناڑیوں اور کھلاڑیوں کی حخومت نے صوبے کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا اور آخری وقت میں پشاور کا بی آر ٹی کی صورت میں اپریشن کیا گیا اور اب پشاور کے پیٹ کو ٹانکے لگانے کا طریقہ انہیں نہیں آتا اور پشاور کو کھنڈرات میں تبدیل کردیا ہے اسی طرح امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے59مہینے اقتدار کے مزے لئے اور آخری مہینے میں اپنی روایات کے مطابق پی ٹی آئی حکومت پر الزامات لگانا شروع کردیئیاگر انہیں عمران خان نے کہا تھا کہ سینٹ الیکشن میں اوپر سے آرڈر ہے تو اب تک کیوں خاموش تھے پہلے کیوں نہیں آواز اٹھائی انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی اور پی ٹی آئی میں کوئی فرق نہیں اور انکی اتحادی حکومت میں پی کے71یعنی پی کے87میں ایک کلاس فور بھی بھرتی نہیں کیا جبکہ ہم نے اپنے پانچ سالہ دور حکومت میں ہزاروں افراد کو نوکریاں دیکر عوام کو روایتی سیاستدانوں سے نجات دلائی اور اب دوبارہ کچھ لوگ جو کہ کونسلر کا سیٹ بھی نہیں جیت سکتے وہ صوبائی اسمبلی کا الیکشن جیتنے کیلئے میدان میں نہیں نکلے ہیں بلکہ پی کے87کے عوام کی ترقی کا بریک لگانے کیلئے ہمارامقابلہ کررہے ہیں لیکن میں قوم کی محرومویں کے ازالے کیلئے سیاست کے میدان میں نکلا ہوں اگر کوئی مجھ سے زیادہ قوم کی خدمت کرسکتا ہے تو میں قوم کی خدمت کی یہ پگڑی اسے دیدوں گا لیکن قوم کے غداروں کا ہر جگہی مقابلہ کروں گا انہوں نے کہا کہ اے این پی کے سینٹر باز محمد خان نے اپنے کارکنوں کے ذریعے یونین کونسل بیز ن خیل کو پی کے90میں شامل کرنے کیلئے الیکشن کمیشن میں درخواست جمع کرائی ہے کیونکہ یونین کونسل بیزن خیل پیپلز پارٹی کا گڑھ ہے اور اس قسم کے خربوں سے وہ جیت نہیں سکتے ہم انکے خلاف الیکشن کمیشن میں جارہے ہیں اور انکی اسمبلی میں جانے کی خواہش کبھی پوری نہیں ہوگی۔کیونکہ وہ ہم سے شکست کی ہیٹ ٹرک مکمل کرچکے ہیں اور پی کے71یعنی پی کے87کے عام کیلئے انہوں نے کچھ بھی نہیں کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.