17

پرانی سبزی منڈی میں اپریشن – 70دکانیں مسمارکرنے کے خلاف مظاہرہ

ٹی ایم اے بنوں کے عملے نے رات گئے پرانی سبزی منڈی میں اپریشن کرتے ہوئے70دکانیں مسمار کردیں جسکے خلاف نیوسبزی منڈی ایسوسی ایشن کے جنرل سیکرٹری محمد اسلام کی قیادت میں متاثرہ دکانداروں نے احتجاجی مظاہرہ کیا مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے محمد اسلام خان،انجمن تاجران حقیقی کے جنرل سیکرٹری رحمت آیاز خان اور پڑیاں ایسوسی ایشن کے صدر ایوب نواز خان نے کہا کہ ٹی ایم اے بنوں کے عملے نے رمضان المبارک جیسے مقدس مہینے کا احترام بھی نہیں کیا اور نوٹس دیئے بغیر ہمیں پیسوں کے عوض الاٹ شدہ قانونی دکانات کورات کی تاریکی میں بمع سامان اور دکانات میں پڑی نقدی سمیت مسمار کرکے ظلم کی انتہا کردی ہے.

ہمارا کروڑوں روپے کا نقصان کرکے رمضان المبارک جیسے مقدس مہینے میں262خاندانوں کو بیروزگار کیا ہے حالانکہ انڈیا جیسے دشمن ملک نے بھی رمضان میں مقبوضہ کشمیر میں اپریشن معطل کرنے کا اعلان کردیا ہے انہوں نے کہا کہ ہم نے یہ دکانیں میونسپل کمیٹی کی طرف سے نقشے کے مطابق الاٹ ہونے کے بعد لاکھوں روپے جمع کرکے اپنے پیسوں پر بنوائیں ہیں اور1992سے ہم یہاں کاروبار کررہے ہیں ان دکانوں کا ہم سالانہ کرایہ بھی میونسپل کمیٹی کو جمع کررہے ہیں اور اب بھی چھ مہینے کا ایڈوانس کرایہ جمع کیا ہے پھر یہ دکانیں غیر قانونی کیسے ہوسکتی ہیں انہوں نے اعلان کیا کہ اس ظلم کے خلاف ہم عدالت بھی جائیں گے اور چیف جسٹس آف پاکستان سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ اس تاریخی ظلم کا سوموٹو ایکشن لیں اور ہمیں انصاف دلائیں بعد ازاں مظاہرین ٹی ایم اے عملے کے خلاف ایف آئی آر درج کرانے تھانہ سٹی پہنچ گئے اور ایس ایچ او تھانہ سٹی کو تحریری درخواست دیدی جس پر انہوں نے کاروئی کی یقین دہانی کرائی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں