29

نجی سکول کے پرنسپل پر مبینہ تشدد اورپولیس کے خلاف احتجاجی مظاہرہ

دی بنوں – پرائیویٹ تعلیمی اداروں کے سربراہان نے نجی سکول کے پرنسپل پر مبینہ تشدد اورپولیس کی غنڈہ گردوں کی پشت پناہی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا ایس ایچ او سٹی غنڈہ گردوں کی سرپرستی کر رہے ہیں اور واقعہ ان کی ایما پر ہوا ہے واقعہ کا نوٹس نہ لیا گیا تو پرائیویٹ سکولوں کے ساتھ ایسے واقعات مزید ہو سکتے ہیں.
ایس ایچ او کو فوری معطل کیا جائے گزشتہ روز بنوں پریس کلب میں ہنگامی پریس کانفرنس سے پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک کے صوبائی نائب صدر محمد ذوالفقار احمد ،نیشنل ایجوکیشن کونسل کے ریجنل صدر محمد اقبال احمد ،پین کے ضلعی نائب صدر معمون اور فنانس سیکرٹری زاہد اللہ و انتخاب احمد نے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ تھانہ سٹی کی حدود میں واقع ریلوے روڈ پر بلال نامی فاسٹ فوڈ کے دکاندار جس نے اپنے دکان کو دہشت گردی اور فحاشی کا مرکز بنایا ہوا ہے ہمارے سکول کی خواتین اساتذہ اور طالبات کے پیچھے غیر اخلاقی آوازیں کساکرتا تھا اور ہمارے سکول کے بچوں کو غیر اخلاقی حرکات پر اُکسا رہا تھا جس پر ہم نے اُنہیں سمجھایا بھی لیکن وہ باز نہیں آئے انہوں نے کہا کہ مذکورہ دکاندار سکول کی خواتین اساتذہ اور طالبات کے والدین کو بھی ہراساں کرنے کی کوششوں میں مصروف تھا تو ہم نے اپنے سکول طلباء و طالبات کو ان کی دکان سے خریداری کرنے سے منع کر دیا گزشتہ دن 13مارچ کو مذکورہ دکاندار نے ایک درجن سے غنڈہ گردوں کے ہمراہ برینز پبلک ہائی سکول کے پرنسپل انتخاب احمد کو پرحملہ آور ہوئے اور ان کو اپنے سکول کے گارڈ سمیت زخمی کر دیا جس کی سٹی پولیس نے تاحال مقدمہ درج نہیں کیا ہے انہوں نے کہا کہ سٹی پولیس اسٹیشن کے ایس ایچ او بنیامین خان غنڈہ گردوں کے ساتھ ملے ہوئے ہیں اور یہ واقعہ ان کی ایما ء پر رونماء ہوا ہے ایک ہفتہ قبل بھی ایک واقعہ رونماء ہونے کی صورت میں پرنسپل انتخاب احمد کو بلا وجہ حوالات میں بند کیا تھا اور مخالفین کی طرف سے زبردستی صلح کرانے کیلئے دبائوڈالا تھا انہوں نے کہا کہ ہم شریف لوگ ہیں اور قوم کے بچوں کو پڑھا کر بہتر تعلیم دلوا رہے ہیں بندوق نہیں اٹھا سکتے لیکن اب یہ غنڈہ گرد ہمارے ہاتھوں سے قلم اور کتاب چھین کر بندوق دینا چاہتے ہیں جس کے ہم قائل نہیں ہے انہوں نے چیف جسٹس آف سپریم کورٹ ،چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ ،آئی جی خیبر پختونخوا سے مطالبہ کیا کہ وہ اس واقعے کا ازخود نوٹس لیں سٹی پولیس اسٹیشن کے ایس ایچ او بنیامین کو فوری طور پر معطل کرکے ان کی تحقیقات کرائی جائے اور مذکورہ غنڈہ گرد دکاندار کو یہاں سے فوری ہٹایا جائے بصورت دیگر صوبہ بھر کے سکولوں کے بچوں کو سڑکوں پر لاکر بھر پوراحتجاجی تحریک شروع کریں گے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.