40

منتخب بلدیاتی نمائندوں اور تاجر برادری کی محکمہ گیس کو ڈیڈ لائن

منتخب بلدیاتی نمائندوں اور تاجر برادری نے محکمہ گیس کو اپنا قبلہ درست کرنے جبکہ میرٹ پر پورا اترنے والے سائلین کو فوری گیس میٹر لگانے کیلئے ایک ہفتے کی ڈیڈ لائن دیدی اس سلسلے میں ناظمین اور تاجر رہنماؤں کا مشترکہ احتجاجی جرگہ منعقد ہوا جس سے خطاب کرتے ہوئے چیمبر آف کامرس کے صدر شاہ وزیر خان،ناظمین محمد اسلام خان،اسماعیل خان،خالد شاہ،یونین کونسل ہنجل سے ضمنی الیکشن کے امیدوار برائے ڈسٹرکٹ کونسل ملک عمران خان،سبز علی خان،زبیر خان ،ریاض ودیگر ناظمین نے کہا کہ محکمہ گیس کے مقامی آفسران اور عملے نے عوام گیس کنکشن کیلئے آنے والے سائلین کو فٹ بال بنایا ہے اور رجسٹریشن،گیس کنکشن اور دیگر مسائل کے سلسلے میں آنے والوں کو دفاتر کے چکر لگوائے جاتے ہیں متعلقہ آفسران دفاتر میں ہفتے ہفتے موجود نہیں رہتے ہیں رجسٹریشن کے نام پر چھ مہینے چکر دیئے جاتے ہیں ڈیمانڈ نوٹ ایک سال بعد دیا جاتا ہے اور تمام مراحل مکمل ہونے کے بعد اکثر لوگوں سے جنہوں نے پیسے جمع کئے ہوتے ہیں ان سے دوبارہ پیسے جمع کروائے جاتے ہیں اور اگر کوئی شور کریں یا سفارش کرائیں اور تمام قانونی تقاضے بھی پورے کئے ہو تو ان سے کہا جاتا ہے کہ آپ کیلئے میٹر بعد میں لگائیں گے اگر آپ کے گھر کے قریب گیس پائپ گزری ہے تو ان سے عارضی کنکشن لیں جس سے گیس چوری میں بھی اضافہ ہوا ہے دوسری جانب گیس کے کم پریشر اور گھنٹوں گھنٹوں لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے بھی عوام شدید پریشان ہیں موجودہ گیس انتظامیہ گیس منصوبے کے خلاف سازش کررہی ہے اور دفتر کو ناکام بنارہی ہے اور گیس جو کہ ایک نعمت ہے موجودہ سٹاف نے عوام وک اس نعمت سے محروم کررکھا ہے انہوں نے وزیر اعظم پاکستان،وفاقی وزیر پٹرولیم وگیس،وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا،کمشنر بنوں اور ڈپٹی کمشنر بنوں سے پرزور مطالبہ کیا کہ وہ بنوں گیس آفس میں آفسران کی موجودگی کو صبح 9بجے سے شام 5بجے تک یقینی بنائیں،جن لوگوں نے تمام قانونی تقاضے پورے کئے ہیں ان کو فوری گیس کنکشن دیئے جائیں کم گیس پریشر اور گیس لوڈ شیڈنگ کا نوٹس لیکر گیس عملے کا قبلہ درست کریں اور اگر عمے کی کمی ہے تو سٹاف میں اضافی کرائیں بصورت دیگر ایک ہفتے بعد اگر مسائل حل نہ ہوئے تو تاجر برادری عوام اور منتخب نمائندے سڑکوں پر نکلنے اور پہیہ جام وشٹر جام ہڑتال کرنے سے بھی گریز نہیں کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.