42

صاف پانی کیس میں پرویز خٹک سپریم کورٹ طلب


پشاور:سپریم کورٹ نے صاف پانی فراہمی کیس میں وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک کو طلب کرلیا۔

جمعرات کو سپریم کورٹ پشاور رجسٹری میں چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں صاف پانی کی فراہمی اور اسپتالوں میں فضلے سے متعلق ازخود نوٹس کیسز کی سماعت ہوئی۔

چیف جسٹس نے استفسار کیا صاف پانی کی فراہمی کی کیا پوزیشن ہے ؟ گندگی کہاں پھینک رہے ہیں ؟چیف سیکریٹری نے جواب دیا گندگی دریاؤں میں پھینک رہے ہیں۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے سنا تھا خیبر پختونخوا میں گڈ گورننس ہے ، وزیراعلیٰ پرویز خٹک کو بلا لیں ہم بیٹھے ہیں۔

اسپتالوں کے فضلے سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس ثاقب نثار نے استفسار کیا کہ اسپتالوں سے کتنا فضلہ نکلتا ہے، فضلہ تلف کرنے کی کتنی مشینیں ہیں ، کتنا فضلہ اٹھا رہے ہیں ؟ آپ کے پاس کوئی معلومات ہیں، ہم نے بہتری کیلئے کچھ کرنا ہے۔

ایڈیشنل ڈی جی ہیلتھ نے جواب دیا کہ ہمارے پاس کوئی ڈیٹا نہیں ہےجس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے 6 بجے تک تمام ڈیٹا چاہیئے۔

چیف جسٹس نے اسپتالوں میں فضلے سے متعلق کیس میں چیف سیکرٹری اور سیکرٹری ہیلتھ جبکہ صاف پانی کی فراہمی کیس میں وزیر اعلیٰ پرویز خٹک کو طلب کر لیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.