73

’شریف فیملی کیخلاف ریفرنسز کا فیصلہ ایک ماہ میں سنایا جائے‘

چیف جسٹس نے احتساب عدالت کو سابق وزیراعظم نوازشریف ، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کے خلاف دائر تینوں ریفرنس کا فیصلہ ایک ماہ میں سنانے کا حکم دے دیا۔

چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں احتساب عدالت کی جانب سے شریف کے خلاف ٹرائل مکمل کرنے کی مدت سماعت میں توسیع کی درخواست پر سماعت کی۔

دوران سماعت نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث نے 6 ہفتوں میں ٹرائل مکمل کرنے کی استدعا مسترد کرتے ہوئے چیف جسٹس نےریمارکس دیئے کہ ملزمان بھی پریشان اور قوم بھی ذہنی اذیت کا شکار ہے، اب ان کیسز کا فیصلہ ہوجانا چاہئے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ نوازشریف اور مریم نواز بیگم کلثوم کی عیادت کے لیے جانا چاہتے ہیں تو جاسکتے ہیں۔جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ آپ تشہیر کیلئے کہتے ہیں ہمیں کلثوم نواز کی عیادت کیلیے اجازت نہیں دی گئی، زبانی درخواست کریں ہم اجازت دیں گے

اس موقع پر نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث اور نیب کے ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل پیش ہوئے۔ دوران سماعت چیف جسٹس نے کہا کہ خواجہ صاحب آپ ابھی جوان ہیں، میں بوڑھا ہو کر اتوار کو بھی سماعتیں کرتا ہوں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.