137

شاہ محمد کا پانچ ارب روپے کی لاگت سے جاری بنوں باران ڈیم کی ریزنگ منصوبے کا دورہ

پاکستان تحریک انصاف کے رکن صوبائی اسمبلی ملک شاہ محمد خان وزیر نے پانچ ارب روپے کی لاگت سے جاری بنوں باران ڈیم کی ریزنگ منصوبے کا دورہ کیا اس موقع پر ایکسن ایریگیش،سی اینڈ ڈبلیو کے ایس ڈی او امیر اللہ خان اور پراجیکٹ ڈائریکٹر کے علاوہ متعلقہ محکموں کے آفسران بھی انکے ہمراہ موجود تھے جنہوں نے ایم پی اے ملک شاہ محمد خان کو باران ڈیم ریزنگ منصوبے اور سڑکوں کی تعمیر بارے تفصیلی بریفنگ دی پراجیکٹ ڈائریکٹر نے بتایا کہ باران ڈیم کی تعمیر1962میں مکمل ہوئی تھی اور اس سے 77ہزار ایکڑ اراضی سیراب ہوتی تھی لیکن اب یہ ڈیم مٹی سے بھر گیا ہے اور جب بارش ہوتی ہے تب اس سے بمشکل17ہزار ایکٹرزمین سیراب ہوتی ہے پہلے اسکی سٹوریج 98ہزار ایکڑ فٹ تھی اب ریزنگ کی وجہ سے 7میٹر ہوگی اور سٹوریج بھی پہلے سے زیادہ یعنی ایک لاکھ سے بھی زیادہ ایکڑ فٹ ہوگی یہ پراجیکٹ چار سال میں مکمل ہوگا اس موقع پر ایم پی اے ملک شاہ محمد خان نے کہا کہ ڈیم کی ریزنگ پر تیزی سے کام جاری ہے اور ہ منصوبہ تحریک انصاف کے سابقہ دور حکومت میں منظور ہوا تھا جو کہ بنوں کے عوام کیلئے پی ٹی آئی حکومت کا تحفہ ہے اور اس سے لکی مروت کے عوام بھی مستفید ہوں گے اور ڈیم کے ساتھ ٹورازم پارک بھی بنایا جائیگا جو کہ بنوں کے عوام کیلئے بہترین تفریحی منصوبہ ہوگا انہوں نے کہا کہ بارن ڈیم کی تعمیر سابق صدر پاکستان ایوب خان کے دور میں مکمل ہوئی تھی اور بنوں کی70فصد آبادی کا ذریعہ معاش زراعت پر ہے لیکن مٹی بھرنے سے ڈیم خشک ہوگیا تھا اور بنوں کا زرعی سیکٹر بری طرح متاثر ہوا تھا لیکن ہمارے مطالبے پر تحریک انصاف حکومت نے باران ڈیم ریزنگ منصوبے کی منظوری دی جس کیلئے پانچ ارب روپے منظور ہوئے جس کیلئے 25فیصد فنڈز صوبائی حکومت جبکہ 75فیصد فنڈز مرکزی حکومت دیگی اس کے ساتھ400ملین روپے کی لاگت سے سڑک کی تعمیر کا کام بھی جاری ہے جبکہ محکمہ ایریگیشن کو سپیل وے سے ہیڈ ورکس تک سات کلومیٹر سڑک کی تعمیر کیلئے بھی سروے کی ہدایت جاری کی ہے جو کہ اس ڈیم ریزنگ منصوبے میں ممکن ہے انہوں نے کہا کہ ڈیم کی ریزنگ سے ڈیم کی عمر بھی بڑھے گی اور بنوں میں سبز انقلاب آئیگا جس سے بنوں سے لکی مروت تک کی بنجر زمینیں سیراب ہوکر سونا اگلیں گی اور روزگار میں بھی اضافہ ہوگا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.