36

سپریم کورٹ نے اجینوموتو کی خرید و فروخت پر پابندی عائد کر دی

پاکستان کی سپریم کورٹ نے ملک بھر میں چینی نمک جس کو عام زبان میں اجینوموتو کہا جاتا ہے کی فروخت اور برآمد و درآمد پر پابندی عائد کردی ہے۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے یہ حکم سپریم کورٹ کی لاہور رجسٹری میں اجینوموتو نمک کی فروخت کے خلاف ازخود نوٹس کیس کی سماعت میں دیا۔

سماعت کے دوران چیف سیکریٹری پنجاب نے سپریم کورٹ کو بتایا کہ سندھ میں اجینوموتو کی فروخت پر دفعہ 144 نافذ ہے، جبکہ پنجاب میں فوڈ اتھارٹی کارروائی کر رہی ہے۔

انھوں نے بینچ کو مزید بتایا کہ اجینوموتو کی برآمد، درآمد سے متعلق معاملہ کابینہ کے پاس زیر التوا ہے۔

چیف سیکریٹری پنجاب نے بینچ کو آگاہ کیا کہ حکومت سندھ نے صوبے میں انینوموتو کی خرید و فروخت پر پابندی عائد کی ہوئی ہے۔

عدالت نے اجینوموتو کی خرید و فروخت اور درآمد و برآمد پر ملک بھر میں پابندی عائد کرنے کا حکم دیا۔

چیف جسٹس ثاقب نثار کا کہنا تھا کہ عدالتی حکم سے پاکستان کے تمام چیف سیکریٹریز کو بھی آگاہ کیا جائے، جبکہ وزیر اعظم کابینہ کے ساتھ مل کر معاملہ نمٹائیں۔

واضح رہے کہ جنوری میں پنجاب فوڈ اتھارٹی کی رپورٹ میں اجینوموتو کو مضر صحت قرار دیا تھا۔

رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ اس کے استعمال سے سر درد، تھکاوٹ، قے اور پسینہ آتا ہے۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا تھا کہ اس کے استعمال سے بلڈ پریشر میں اضافہ ہوتا ہے اور حاملہ خواتین کے لیے خاص طور پر یہ مصر صحت ہے۔

پنجاب فوڈ اتھارٹی نے اجینوموتو کی خرید و فروخت پر 31 مارچ تک مکمل پابندی کی ڈیڈ لائن دی تھی۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.