31

سبزی منڈی میں اپریشن نیب سے بچنے کیلئے کیا گیا: ملک خالد

تحصیل حکومت میں تحریک انصاف کے اپوزیشن لیڈر ملک خالد خان نے میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ تحصیل میونسل کمیٹی نے پرانا میوہ وسبزی منڈی میں غیر قانونی طریقے سے دُکانات الاٹ کئے تھے جنہیں راتوں رات مسمار کردیا گیا ۔دکانوں کی تعداد70تک بتائی جارہی ہے جو دکان مالکان کے ساتھ ظلم وزیادتی کے مترادف ہے۔ ٹی ایم او حکام نے اپنی کرپشن چھپانے کیلئے راتوں رات دکانات صرف اس لئے مسمار کئے کیونکہ اس غیر قانونی دُکانات کی الاٹمنٹ اور کروڑوں روپے بٹورنے کے خلاف نیب میں بھی یہ کرپشن کیس سر اُٹھا چکا ہے اور نیب نے اس سلسلے میں ٹی ایم اے حکام سے فائل طلب کی ہے۔ نیب کو چاہیئے کہ اُ ن بڑے کرپٹ عناصر پر ہاتھ ڈالے جنہوں نے دکانوں کی غیر قانونی اور جعلی الاٹمنٹ کی تھی۔ اُنہوں نے کہا کہ کاروبار کرنے والے تاجروں کا کروڑوں روپے کا نقصان ہوا ہے جس میں وہ کسی قسم کے قصور وار نہیں ۔لیکن میونسپل انتظامیہ نے اپنی کرپشن پر پردہ ڈالنے اؤ دیکھا نہ تاؤ سامان سے بھرے دکانوں کو راتوں رات مسمار کردیا ہے ۔جس نے بھی یہ اقدام اُٹھایا ہے اور ان تاجروں کا معاشی قتل کیا ان کے خلاف انکوائری مقرر کی جائے اور انہیں سزا دی جائے ۔
اُنہوں نے بتایا کہ تحصیل حکومت میں ہر فورم پر اپوزیشن کا بھرپور کردار ادا کریں گے اور ہر غلط اقدام کے خلاف دیوار بن کر کھڑے ہوں گے کہ تحصیل کی ترقیاتی فنڈز کی رقم کہاں اور کس منصوبے پر خرچ کی گئی ۔کسی کے پاس کوئی حساب جواب نہیں تحصیل حکومت میں اندھیر نگری چوپٹ راج قائم ہے۔ لاکھوں روپے ہر ماہ گاڑیوں کی تیل کی مدد میں ہڑپ کئے جاتے ہیں۔ سبزی منڈی اور مرغی منڈی کی دکانوں کی مسماری کے سلسلے میں جو کمیٹی تشکیل دی گئی ہے اُن کے ممبران سے بھی مطالبہ ہے کہ وہ حقیقت پر مبنی فیصلہ کرکے اصل مجرمان کو سامنے لائے تاکہ غریب تاجروں کی نقصانات کا ازالہ ہوسکے ۔اپوزیشن لیڈر نے صوبائی حکومت سے میونسپل کمیٹی اور تحصیل حکومت میں ہونے والے کرپشن کے خلاف فوری ایکشن لینے کا مطالبہ کیا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.