26

سابق پراجیکٹ ڈائریکٹر محب اللہ کی بنوں ٹاون شپ کی خدمات پر ایک نظر

دی بنوں ۔ بنوں ٹاون شپ کے پراجیکٹ ڈائریکٹر ملک محب اللہ خان نے 01-07-2011میں پی ڈی (PD) کی پوسٹ پر چارج سنبھالا اوربنوں ٹاون شپ کا جائزہ لینے کیلئے افسران پر مشتمل کمیٹی بنائی اور روزانہ کی بنیاد پر ان مسائل کی فوری حل طلب کرتے اور اُس پر فوری طور پر عمل در امد کرتے بنوں ٹاون شپ کی صارفین کیلئے زندگی اور موت کا درجہ رکھنے والا آہم مسئلہ گیس کی منظوری تھا۔

پراجیکٹ ڈائریکٹر ملک محب اللہ خان اپنے اختیارات اور اثرات استعمال کرتے ہوئے وفاق سے گیس کی منظوری لی اور گیس ڈیپارٹمنٹ کیلئے ایڈوانس 5کروڑ روپے جمع کئے جبکہ بنوں ٹاون شپ کے مین سڑک پر ڈھائی کروڑ روپے گیس کے مین پائپوں کی بچھانے پر اخراجات آرہے تھے لیکن کچھ قوتوں نے پی ڈی کو اس عظیم منصوبے سے دور رکھنے کیلئے ٹاون شپ میں سازش شروع کی اس طرح بنوں ٹاون شپ کے فیز اور فیز ٹو میں بجلی کیلئے ٹرانسفرمر ، کمبے ، تار وغیرہ بچھا کر علاقے کو بجلی کے روشنی سے منور کیا۔

اس طرح ٹاون شپ میں عوام کو پینے کے پانی فراہم کرنے کیلئے تین عدد ٹیوب ویلز موجود تھے جس میں مزید اضافہ کیا گیا اور تین نئے ٹیوب ویلوں کا قیام عمل میں لایا گیابنوں ٹاون شپ کے افسران اور ماتحتوں کو فلڈ میں ڈیوٹی کرنے کیلئے سخت احکامات جاری کئے گئے اور سرکاری ڈیوٹی اوقات کار کے دوران سرکاری افسران اور ماتحتوں کو مین آفس میں داخلے پر پابندی عائد کی گئی کہ سرکاری اوقات کار کے دوارن کوئی آفسر یا ماتحت خوا مخواہ دفتر نہیں آئینگے ایمرجنسی کال پر پراجیکٹ ڈائریکٹر ملک محب اللہ خان نے فوراً خاضر ہو کر ٹاون شپ کے مسائل گھر کے دہلیز پر حل کئے اس طرح ٹاون شپ کو سر سبز بنانے کیلئے ساڑھے پانچ لاکھ روپے سے پودے خرید کر بنوں ٹاون شپ کو سر سبز کیا اور بقاعدہ نرسری قائم کی اس طرح بنوں ٹاون شپ کے عوام کو سہولیت کیلئے شادی حال ، کی تعمیر کی اس طرح سڑکیں اور پارکوں کی خوبصورتی پر حصوصی توجہ دی گئی بنوں ٹاون شپ کے باہر مین پائپوں پر ساڑھے تین کروڑ روپے کی اخراجات آئے اور بنوں ٹاون شپ کے خزانے کو ایک کروڑ پانچ لاکھ روپے کا اضافہ بوجھ برداشت کرنا پڑا بنوں کے صحافیوں کیلئے 20کنال اراضی کیلئے میڈیا کالونی کیلئے جگہ مختص کی اور انہوں نے بقاعدہ مسجد بھی تعمیر کی لیکن اُس وقت صوبائی حکومت نے انتقامی کاروائی کرتے ہوئے بنوں کے صحافیوں کو میڈیا کالونی سے محروم رکھا گیا کم وقت میں بنوں ٹاون شپ کے تقریباً22پی ڈی تبدیل ہوئے اور کسی نے بھی عوام مسائل حل کرنے پر توجہ نہیں دی موجودہ حالت میں اسسٹنٹ کمشنر بنوں ، بنوں ڈیویلمنٹ اتھارٹی کے پراجیکٹ ڈائریکٹر شبیر خان اپنی خدمات سر انجام دے رہے ہیں بنوں ٹاون شپ میں صفائی کی صورت حال بہتر بنانے کیلئے اُس وقت کے پراجیکٹ ڈائریکٹر ملک محب اللہ خان روزانہ کی بنیاد پر ہر فیز کا ویزٹ کرتے اور آفس میں بقاعدہ کمپلینٹس آفس قائم کیا گیا تھا اور بنوں ٹاون شپ کے عوام کو گھر کے دہلیز پر 24گھنٹے ڈیوٹی کی سہولیات فراہم کرتے جبکہ اس سے پہلے پراجیکٹ ڈائریکٹرز نے دونوں ہاتھوں سے بنوں ٹاون شپ کے فنڈز کا غیر ضروری اخراجات کرکے کروڑوں روپے ہڑپ کئے بنوں ٹاون شپ کے عوام کی خواہش ہے کہ ہمیں ماضی کا پراجیکٹ ڈائریکٹر ملک محب اللہ خان کی خدمات دوبارہ تعینات کیا جائے موجودہ حالت میں بنوں ٹاون شپ کی خوبصورتی میں اشد ضرورت ہے سیوریج نظام کو دوبارہ از سر نوں تعمیر کرنے کی اشد ضرورت محسوس کی جا رہی ہے اس طرح پی ڈی کے ملازمین کے حقوق کا مکمل تخفظ کیا جائے اور جن افسران نے کروڑوں روپے ہڑ پ کئے ہے ان کے خلاف نیب بقاعدہ تحقیات کریں کیونکہ اکاونٹنٹ افسران نے دونوں ہاتھوں سے خزانے کو لوٹا ہے جس کا ریکارڈ آفس میں موجود ہے دیکھئے کہ صوبائی حکومت اس کا کیا نوٹس لیتے ہیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.