ریحام کی کتاب 11

ریحام کی کتاب عمران خان کی سیاست پر کیا اثرڈالےگی؟

چرچا ہے کہ دو دفعہ مطلوقہ ریحام خان کتاب مارکیٹ میں لانچ کر رہی ہے۔ جس کا پرائم مقصد عمران خان کی بد نامی ہے۔ ریحام خان کے پیچھے ماسٹر مائنڈ کو شائد کاتب تقدیر کی طاقت کا اندازہ نہیں۔ شائد اسے تاریخ کا ذرہ برابر بھی علم نہیں۔ ایسی کوششوں روز اول سے ہو رہی ہیں مگر حقائق کبھی چھپتے نہیں۔ کاتب تقدیر کے عرش پر اربوں کھربوں سال پہلے لکھا جا چکا ہے کہ وہی عزت و ذلت دینے والی ذات ہے۔ و تعز من تشاء و تذل من تشاء۔ حضرت موسی’ علیہ سلام پر عورت نے زنا کا الزام لگایا تھا مگر کیا ہوا کچھ بھی اسکی عزت کو کچھ نہیں ہوا۔ حضرت یوسف علیہ سلام پر بدکاری کا الزام لگا۔ لیکن کاتب تقدیر نے حضرت یوسف علیہ سلام کی بے عزتی نہیں ہونے دی۔
ریحام خان سے پہلے ہمارے وطن میں بھی ایسا ہوا ہے۔ ایسا کرنے والے اب بھی موجود ہیں بلکہ ریحام کے پیچھے یہی لوگ موجود ہیں۔ بے نظیر بھٹو اور نصرت بھٹو کی جعلی ننگی تصوریں اس زمانے میں ہیلی کاپٹر سے گرائی گئیں جس زمانے میں فوٹو شاپ جیسے سافٹ ویئر عام نہ تھے اور کچھ لوگ ہی ایسی ایڈٹڈ تصویروں کی شناخت کر سکتے تھے لیکن نہ نصرت بھٹو کی عزت کو کچھ ہوا اور نہ بی بی کی عزت کو الٹا بی بی دو دفعہ اس وطن کی وزیر اعظم بھی بنی۔
سیاستدانوں کے جنسی سیکینڈلز کے بارے میں ” پارلیمنٹ سے بازار حسن تک” ایک کتاب لکھی گئی مگر آج تک انکی مقبولیت کو کچھ نہ ہوا۔ آج بھی وہی سیاستدان پارلیمنٹ میں بیٹھے ہیں اور پوری آب و تاب سے ،شان و شوکت سے اور جوش و جذبے سے بیٹھے ہیں۔ ایک وقت تھا کہ استاد الاعلماء مولانا سمیع الحق صاحب پر زنا کا الزام لگوایا گیا اور ایک رنڈی نے ایک رسالے کو انٹرویو کچھ اس انداز میں دیا کہ اسکی باتوں سے یوں لگتا کہ گویا ایسا ہوا ہوگا۔ سمیع الحق صاحب کی عزت اللہ نے کل بھی محفوظ رکھی تھی۔ آج بھی وہ اس دنیا میں سب کی آنکھوں میں قابل احترام ہیں۔ باچا خان کے بارے میں قیام پاکستان سے لیکر آج تک سینکڑوں کتابیں لکھی گئیں مگر آج جتنی عزت باچا خان کی ہے شائد ہی کسی کی ہو۔ عوامی نیشنل پارٹی کو بدنام کرنے کے لئے حالیہ دنوں میں عوامی پارٹی کے ایک پرانے عہدیدار جمعہ خان صوفی کو استعمال کیا گیا۔اس سے ایک کتاب بعنوان ” فریب ناتمام” کے نام سے لکھوائی گئی مگر کیا عوامی نیشنل پارٹی کی سیاست میں ایک فیصد کمی آئی جواب ہے نہیں۔
ریحام خان کی حالیہ شیطانی کوشش اس کے لئے اور اسکے شیطانی ڈرامے کے ڈائرکٹر و پروڈیوسر کے لئے وبال جان بنے گی۔ حالیہ کتابی ڈرامہ اسی طرح فلاپ ہوگا جس طرح اسکا پروگرام نیو ٹی وی پر فلاپ ہوا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں