32

بروزسوموار بنوں کی شاہراہیں احتجاجاً بند ہونگی

متحدہ بنوں محاذ نے سوموار کو مطالبات کے حق میں بنوں شہر کی اہم شاہراہوں کو احتجاجاًبند کرنے کا اعلان کر دیا ۔بنوں کی تمام قبیلوں سے احتجاجی جلوس نکالے جائیں گے ۔متحدہ بنوں محاذ کے زیر اہتمام 4نکاتی ایجنڈے پر بنوں بچاؤ تحریک کی روشنی میں بنوں پریس کلب کے سامنے احتجاجی کیمپ دوسرے روز بھی جاری رہا جس میں علماء کرام ،وکلاء برادری ،قومی مشران ،مختلف سیاسی جماعتوں ،سماجی ،طلباء تنظیموں سمیت ہر مکتبہ فکر کے رہنماؤں نے شرکت کی ۔اس موقع پر شرکاء سے اقوام عیسکی قبائل کے سربراہ ملک شکیل خان ،پشاور ہائی کورٹ کے سینئر قانون دان عرفان پیر زادہ ، ، قیموس خان ،انتظار خان میرزاخیلوی ،فہیم شاہ ،خان ریاض خان،سیلانی شاہ،شب نیا ز خان ،جنید رشید خان ،ڈاکٹر عبدالروف قریشی ، اقلیم شاہ ،زعفران وزیر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حالیہ مردم شماری میں آبادی کے تناسب سے ہمیں دوسرا قومی حلقہ دیا گیا تھا مگر بعد میں محکمہ شماریات کی جانب سے نتائج میں رد وبدل کی گئی اور ایک سازش کے تحت ہماری آبادی کو کم ظاہر کیا گیا ۔جس کی بنیاد پر بنوں کو دیئے جانے والے نئے حلقے کو ڈی آئی خان منتقل کر دیا گیا جو کہ ہمارا حق ہے ۔حالیہ مردم شماری کے نتائج پر ہمیں تحفظات ہیں ۔
انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا حکومت کی طرف سے پراپرٹی ٹیکسز میں اضافہ کیا گیا ہے جس میں صرف بنوں میں 800فیصد ٹیکس لاگو کیا گیا ہے جو کہ غیر قانونی ہے مگر دیگر اضلاع میں مناسب اضافہ کیا گیا ہے جو کہ بنوں کے ساتھ نا روا سلوک کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ انہوں نے کہا کہ پورے پاکستان میں لوڈشیڈنگ کے دورانئے میں کمی کی گئی اور وہاں پر شیڈول کے مطابق لوڈشیڈنگ کی جا رہی ہے مگر بنوں میں لوڈشیڈنگ کے دورانیے میں کمی لائی جا رہی ہے نہ ہی شیڈول کے مطابق کی جاتی ہے جو کہ سراسر ظلم اور زیادتی ہے۔ اسی طرح وومن اینڈ چلڈرن ہسپتال بنوں کے میڈیکل سپر نٹنڈنٹ ڈاکٹر دوست محمد خان نے تھیسلیمیا سنٹر کو زنانہ ہسپتال سے 20کلو میٹر کے فاصلے پر واقع خلیفہ گلنواز ہسپتال منتقل کیا تھا جس پر پشاور ہائیکورٹ بنوں بنچ نے واضح احکامات جاری کئے تھے کہ فوری طور پر تھیلیسمیا سنٹر کو دوبارہ اپنی جگہ یا ڈی ایچ کیو ہسپتال بنوں منتقل کیا جائے مگر تاحال ہائیکورٹ کے احکامات پر عمل در آمد نہیں کیا جا رہا ہے جس کے باعث تھیلیمیا کے مریض متاثر ہو رہے ہیں۔اس سلسلے میں متفقہ طور پر فیصلہ کیا گیا کہ سوموار کے روز بنوں کی تمام قبیلوں سے مطالبات کے حق میں احتجاجی جلوس نکالے جائیں گے اور بنوں کی تمام اہم شاہراہوں کو بند کیا جائے گا جس کیلئے تمام قبائل ،قومی مشران اور عوام کو سڑکوں پر لانے کیلئے مہم شروع کر دی.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں