24

امریکی اخبار نے ’بی جے پی‘ کا کچا چٹھا کھول دیا

بھارتی حکومت انتہاپسندافراد اور تشددکو فروغ دے رہی ہے۔ امریکی اخبارواشنگٹن پوسٹ کے مطابق پاکستان سےپچھلےماہ ہوئےجھگڑےکےبعدبھارت میں انتہادرجےکی قوم پرستی کی لہرآگئی ہےاوراپنےہی شہریوں کوغدارسمجھاجانےلگاہے۔

بھارت میں غداروں کی تلاش ہونےلگی ہے مقبوضہ کشمیر اورشمال مشرقی ریاستوں میں بھارتی فوج کے کردار اورمودی حکومت کی انتہاپسندی پرتنقید کرنے والوں کو نوکری سےنکالاجانے لگا۔

واشنگٹن پوسٹ نے لکھاہےکہ کرناٹک کےانجینئرسندیپ نےسوشل میڈیاپرلکھاتھاکہ بی جےپی لوگوں کی زندگیوں سےکھلواڑکررہی ہےجس پر ہندوانتہاپسندوں نےاسے سرعام مرغابنواکرمعافی منگوائی۔

بھارتی میڈیااپنی حکومت اورفوج پرسوال اٹھانےوالوں سےبدلہ لینےکی باتیں کررہاہے، اور بھارتی حکومت یافوج پرتنقید کرنیوالوں کوپاکستان کامددگارٹہرایاجانےلگاہے۔

واشنگٹن پوسٹ کےمطابق مودی کےحکومت میں آنےکےبعدسےہی انہتاپسندتشددپراترآئےہیں۔

مقبوضہ کشمیرمیں فوجی کردارپرتنقیدکرنے والی پروفیسرمادھومترارےکوریٹائرڈکرنل نےملک مخالف کہااور کہاکہ پروفیسرکوتھپڑمارناچاہیے ۔

جس ٹی وی شوپرپروفیسراورریٹائرڈ کرنل تھےاس کےمیزبان کوقتل کی دھمکیاں ملیں جبکہ پروفیسراورریٹائرڈکرنل کے درمیان مباحثےکاسیگمنٹ بعد میں بھارتی ٹی وی کوسینسربھی کرناپڑا۔

دوسری جانب کلنگاانسٹی ٹیوٹ آف انڈسٹریل ٹیکنالوجی نےپروفیسرمادھومترارےکونکال دیا۔

اخبارکے مطابق انتہاپسندوں نےکشمیرمیں ہلاک بھارتی فوجیوں کےلواحقین کوبھی نہیں بخشا اورجنگ کوآخری آپشن کہنےوالی اہلکارکی بیوہ کوانتہاپسندوں کی شدیدتنقیدکاسامناکرناپڑا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.